کوچز کیسے ہوں ، بابر اعظم اور محمد رضوان نے رمیز راجہ کے سامنے اپنی ڈیمانڈ رکھ دی۔۔

621

کوچز کیسے ہوں ، بابر اعظم اور محمد رضوان نے رمیز راجہ کے سامنے اپنی ڈیمانڈ رکھ دی۔۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم اور وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین رمیز راجہ سے غیر ملکی کوچز کو ٹیم مینجمنٹ کا حصہ بنانے کی سفارش کی ہے۔نیو ایئر گریٹنگ’ ویڈیو میں گفتگو کرتے ہوئے رمیز راجہ نے انکشاف کیا کہ انہوں نے ٹیم مینجمنٹ کے حوالے سے دونوں اور عبوری ہیڈ کوچ ثقلین مشتاق سے بات کی۔ تینوں نے پاکستانی ٹیم کے ماحول میں بیرون ملک کوچز لانے کے بارے میں عمومی رائے قائم کی۔رمیز نے کہا کہ میں نے بابر، ثقلین، رضوان سے بات کی اور انہوں نے قومی ٹیم کے ڈریسنگ روم میں غیر ملکی کوچز کو شامل کرنے کی رائے دی۔

“لیکن اس پر میرا سوچنے کا طریقہ کافی کھلا ہے، کیونکہ میں سمجھتا ہوں کہ مقامی لوگوں کو دور دوروں میں شامل ہونا چاہیے۔ آپ کو صرف بہترین ڈریسنگ روم کا ماحول بنانے کے لیے باقاعدہ کوچز کی ضرورت ہے،” انہوں نے مزید کہاکہ بنگلہ دیش اور ویسٹ انڈیز کی سیریز کے دوران اتنے ٹیکنیکل کوچز کو شامل نہ کرنا بڑا ہدف تھا۔ مگر اب اس سال ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ بھی ہو رہا ہے ، ایشیا کپ بھی ہو گا ، اس لئے ہمیں اچھے کوچز ٹیم میں شامل کرنے چاہیں ، رمیز راجہ نے جب بابر اعظم اور محمد رضوان سے مشورہ لیا تو ، بابر اعظم اور محمد رضوان نے کوچز باہر سے لانے کا مطالبہ رکھ دیا۔