میں ابھی بھی ساؤتھ افریقہ کرکٹ میں اہم کردار ادا کر سکتا ہوں ، اے بی ڈی ویلیئرز نے بڑی آفر کروا دی۔

684

میں ابھی بھی ساؤتھ افریقہ کرکٹ میں اہم کردار ادا کر سکتا ہوں ، اے بی ڈی ویلیئرز نے بڑی آفر کروا دی۔۔۔

پروٹیز کے سابق کپتان اے بی ڈی ویلیئرز کا خیال ہے،کہ مستقبل کے لیے میں نوجوانوں کھلاڑیوں کو تیار کرکے انہیں اچھا کھلاڑی بنا کر، جنوبی افریقن کرکٹ کیلئے اہم کردار ادا کر سکتا ہوں۔

37 سالہ کھلاڑی اے بی ڈی ویلیئرز کا کہنا تھا کہ ، “مجھے اب بھی یقین ہے کہ میں ساؤتھ افریقن کرکٹ میں اور رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کے ساتھ آئی پی ایل میں ایک اہم کردار ادا کر سکتا ہوں ۔ مجھے نہیں معلوم کہ آگے کیا ہوگا لیکن میں چاہتا ہو کی میں ساوتھ کرکٹ بورڈ کے ساتھ مل کر کام کروں ، اور نوجوان کھلاڑیوں کو کوچنگ کروں ،

اے بی ڈویلیئرز کا کہنا تھا کہ ،کوئی بھی اس کے بارے میں نہیں جانتا ہے کہ آگے کیا ہو گا ، اور امید ہے کہ، میں مستقبل میں ایک دن پیچھے مڑ کر دیکھ سکتا ہوں، کہ میں نے چند کھلاڑیوں کی زندگیوں میں بہت بڑا فرق پیدا کیا ہے۔ فی الحال یہ میری توجہ ہے کہ مستقبل کوچنگ کروں ۔

ڈی ویلیئرز نے آئی پی ایل میں آر سی بی کے ساتھ آخری سیزن کے بعد تمام طرز کی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔ دائیں ہاتھ کے کھلاڑی نے حیران کن طور پر مئی 2018 میں بین الاقوامی کرکٹ کو الوداع کہہ دیا۔

ڈی ویلیئرز نے COVID-19 کے ماحول میں کھیلنے کے چیلنجوں اور کھلاڑیوں پر بائیو بلبلز کے ذہنی نقصان پر بھی روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ ان تمام عوامل نے ان کے کھیل کو متاثر کیا اور وہ اس سے بالکل لطف اندوز نہیں ہوئے۔ ان کے مطابق، یہی وہ نشانیاں تھیں جنہوں نے انہیں ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کرنے پر مجبور کیا۔

“میں نے اپنے آپ کو اس پارک میں پایا جہاں ٹیم کے لیے رنز بنانا اور اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنا واقعی اس کے ساتھ ہونے والی ہر چیز سے میل نہیں کھاتا تھا اور یہیں سے توازن میرے دستانے کو لٹکانے کی طرف لے جانے لگا۔

میں کبھی بھی ایسا لڑکا نہیں رہا جو اپنی صلاحیت اور اپنی کرکٹ کی مہارت کی ہر ایک چھوٹی توانائی کو دھکیلنے والا ہو، میں نے ہمیشہ کھیل سے لطف اندوز ہونے کے لیے کھیلا ہے۔ اور جس لمحے اس طرح کا عمل نیچے جانا شروع ہوا، میں جانتا تھا کہ میرے لیے آگے بڑھنے کا وقت آگیا ہے،‘‘