قومی کرکٹ سپر سٹار لڑکے کو لڑکی سمجھ کر دو سال تک بات کرتے رہے

شاہد آفریدی نے جذباتی ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ آل راؤنڈر ہوں ناں، غصہ بھی آتا ہے اور رومانٹک بھی ہوں۔

شاہزیب خانزادہ نے بتایا کہ شاہد آفریدی جب کیریئر کے عروج پر تھے اور دنیا ان کیلئے پاگل تھی تو وہ ایک انسان سے فون پر بات کرتے تھے، اس وقت ، فون مہنگا ہوتا تھا، یہاں تک کہ آسٹریلیا سے بھی انہیں کالز کرتے تھے، شاہد آفریدی نے اُس انسان کو شادی کیلئے بلا بھی لیا اور پھر جب لالا نے دروازہ کھولا تو سرپرائز یہ ملا کہ وہ لڑکا تھا جو لڑکی کی آواز میں شاہد آفریدی سے بات کرتا تھا۔

پھر پروگرام کے دوران شاہد آفریدی نے خود بتایا کہ اس کی آواز اتنی پیاری تھی کہ میں آسٹریلیا سے اس کو فون کرتا تھاحالانکہ اس وقت ہمارے پاس موبائل وغیرہ نہیں تھا، کارڈ لے کر ہوٹل سے فون ملاتا تھا اور کئی کئی گھنٹے بات کرتے تھے۔

جب شاہد آفریدی کو یہ سرپرائز ملا کہ دراصل وہ لڑکی نہیں لڑکا ہے، اس پر کرکٹر نے کہا کہ وہ کمینہ عید کے دن ہی سامنے آیا تھا، وہ ہنستے ہوئے بتاتے ہیں کہ پھر میں نے اس لڑکے کو دوسرے کھلاڑیوں کیخلاف استعمال بھی کیا اور وہ لڑکی بن کر ان سے بات کرتا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ دو تین لڑکوں نے تو اس کو شادی کی پیشکش بھی کردی تھی، لیکن وہ پاکستان ٹیم کے کھلاڑی نہیں تھے

Leave a Comment