جب تک جان ہے ٹیم پر قربان ہے ، واپسی کے لیے تیار ہوں ، شاہین نے پوری قوم کے دل جیت لیے

جب تک جان ہے ٹیم پر قربان ہے’، شاہین نے فائنل میں گرنے کی کہانی بتا دی

سوشل میڈیا پر شاہین  کی قومی ٹیم کے اعزاز میں دیے گئے عشائیے سے ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں شاہین نے فائنل کے حوالے سے بات کی، کرکٹر نے کہا ‘جس وقت میں گرا مجھے لگا میرا گھٹنا کٹ گیا ہے، درد بہت زیادہ تھا، مجھ سے چلا بھی نہیں جا رہا تھا’۔

شاہین نے کہا ‘حارث میرے ساتھ تھا، وہ کہہ رہا تھا بار  بار کہ آجاؤ جس پر میں نے کہا رکو مجھے دیکھنے تو دو، مجھے لگ رہا تھا کچھ اور مسئلہ ہوگیا ہے۔ فزیو آئے تو میں نے انہیں کہا ورلڈ کپ فائنل ہے، میرے دو اوورز باقی ہیں، میرا جانا ضروری ہے’۔

کرکٹر نے کہا ‘فزیو نے مجھے کہا  آپ نا جائیں سوجن بڑھ جائے گی، کوئی بڑا مسئلہ نا ہو جائے، میں نے جب اوور کی ایک گیند کرائی تو کپتان نے کہا نہیں اب آپ نہیں کروائیں اور واپس چلے جائیں’۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ‘میری ہمیشہ کوشش رہی ہے اور  رہے گی کہ جب تک جان ہے، اس ٹیم پر قربان ہے’۔

خیال رہے کہ گھٹنے کی تکلیف سے دوچار شاہین شاہ آفریدی کا نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر لاہور میں ری ہیب جاری ہے، کرکٹر کا تین ہفتے قبل  اپینڈکس کا آپریشن بھی ہوا تھا۔

شاہین آفریدی کو گھٹنے کی تکلیف سے نجات کے لیے ری ہیب تجویز کیا گیا تھا۔

اس حوالے سے فاسٹ بولر نے کہا کہ میں تین چار روز سے ری ہیب کر رہا ہوں اور اب بہت اچھا محسوس کر رہا ہوں، میں جم ٹریننگ کر رہا ہوں، سائیکلنگ بھی کرتا ہوں،کوشش ہے کہ دو تین ہفتوں تک ٹیم کو جوائن کر لوں گا.

Leave a Comment